افغانستان میں قیام امن کے بعد اول ترجیح تجارت کا فروغ ہے، ترجمان طالبان

ترجمان طالبان اور افغانستان کے معاون وزیر اطلاعات ذبیح اللّٰہ مجاہد نے کہا ہے کہ افغانستان میں قیام امن کے بعد اول ترجیح تجارت کا فروغ ہے۔

تفصیلات کے مطابق ترجمان طالبان اور افغانستان کے معاون وزیر اطلاعات ذبیح اللّٰہ مجاہد نے اپنے ایک  انٹرویو  میں کہا کہ پاکستان ہمارا ہمسایہ ملک ہے اور اس کا مؤقف قابل تحسین ہے۔

ترجمان طالبان نے کہا کہ پاکستان ‏نے عالمی برادری سےمطالبہ کیا کہ افغانستان سےاچھےروابط قائم کرے ہم اس موقف پرپاکستان کےمشکور ہیں۔

 افغانستان کے معاون وزیر اطلاعات کا کہنا تھا کہ افغانستان کے ساتھ عالمی برادری کے روابط ضروری ہیں۔ کئی ممالک نے امریکا، عالمی برادری کے سامنے ہمارے حق میں آواز اٹھائی جبکہ چین اور روس نے بھی ہمارے حق میں اقوام متحدہ میں بات کی

ذبیح اللّٰہ مجاہد نے کہا کہ پاکستان اور افغانستان میں زبان، مذہب، رسم و رواج کئی چیزیں مشترک ہیں، ماری زبان،مذہب،رسم ورواج ایک ‏جیسے ہیں جبکہ پاکستان سے ہماری سرحد بھی مشترک ہے۔

افغانستان کے معاون وزیر اطلاعات کا کہنا تھا کہ  پنج شیرمیں لڑائی ختم ہوچکی ہے بیشترمقامی عمائدین، علمائےکرام اورمجاہدین ہمارے ساتھ ‏ہیں ہم کسی کےساتھ جنگ نہیں چاہتے اب وقت ہےافغان قوم ملک کی ترقی اورخوشحالی کیلئےکام کرے۔

ذبیح اللّٰہ مجاہد نے کہا کہ ہم پاکستان کےپرچم اورحریت کا احترام کرتےہیں توقع ہے پاکستان بھی ہمارے ‏پرچم اور خودمختاری کا احترام کریں گے۔

ترجمان طالبان اور افغانستان کے معاون وزیر اطلاعات ذبیح اللّٰہ مجاہد کا مزید کہنا تھا کہ افغانستان میں قیام امن کے بعد اول ترجیح تجارت کا فروغ ہے۔ اس وقت افغانستان کوتجارت اوراقتصادی امورکی ضرورت ہے توقع ہےہمسایہ ممالک عالمی سطح پراپنامثبت ‏کردار جاری رکھیں گے۔

Related Articles

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Back to top button